Home / انٹر نیشنل / معیشت کی بدحالی، امن و عامہ کی بحالی طالبان حکومت کے بڑے چیلنجز

معیشت کی بدحالی، امن و عامہ کی بحالی طالبان حکومت کے بڑے چیلنجز

معیشت کی بدحالی، امن و عامہ کی بحالی طالبان حکومت کے بڑے چیلنجز

کابل (ڈیلی پاکستان آن لائن) طالبان 20 سال کی جنگ کے بعد امریکی زیرقیادت نیٹو افواج کے انخلا کا جشن منا رہے ہیں لیکن لاکھوں افغانوں کے لیے تباہ حال معیشت کے درمیان زندگی گزارنا مشکل اور غیر یقینی صورت اختیار کر گیاہے۔دوسری بار ملک کا کنٹرول سنبھالنے والے طالبان نے اپنی فتح کا جشن مناتے ہوئے کہا کہ افغانستان بالآخر ایک “آزاد اور خودمختار” قوم ہے۔سرکاری ملازمین کو کئی مہینوں سے تنخواہیں نہیں ملی ہیں اور بینک بمشکل کام کر رہے ہیں کیونکہ 15 اگست کو طالبان کے ملک پر قبضہ کرنے کے بعد افغانستان بین الاقوامی مالیاتی اداروں سے کٹ گیا ہے۔طالبان جنگجوں اور حکومتی افواج کے درمیان مہینوں کی مہلک لڑائی کی وجہ سے پچاس لاکھ سے زائد افغان اندرونی طور پر بے گھر ہو چکے ہیں۔اقوام متحدہ کے سربراہ انتونیو گوٹیرس نے منگل کے روز آنے والی “انسانی تباہی” کے بارے میں خبردار کرتے ہوئے مزید کہا کہ بنیادی خدمات “مکمل طور پر” ختم ہونے کا خطرہ ہے۔لوگوں میں یہ خدشات بڑھ رہے ہیں کہ آیا طالبان بدحال معیشت کو سہارا دینے میں کامیاب ہوتے ہیں یا نہیں۔ خدمات کی فراہمی اور معیشت کو سنبھالنے کے حوالے سے طالبان کی طرز حکمرانی کے حوالے سے بہت بڑے سوالات جنم لے رہے ہیں۔ورلڈ بنک اور آئی ایم ایف نے جاری امدادی رقم کو بند کر دیا ہے اور یہ صورتحال طالبان کے لیے مزید رکاوٹیں کھڑی کر سکتا ہے۔ افغانستان کے مرکزی بینک بورڈ کے رکن نے امریکی صدر جو بائیڈن اور آئی ایم ایف پر زور دیا کہ وہ ملک کے لیے فنڈز جاری کریں۔ امریکہ نے گزشتہ ماہ افغان مرکزی بینک کے 9.5 بلین ڈالر کے اثاثے منجمد کر دیے۔

User Rating: Be the first one !

About Daily Pakistan

Check Also

نائیجیریا میں اغوا کے خوف سے 12 ملین سے زائد بچوں نے سکول جانا بند کر دیا

نائیجیریا میں اغوا کے خوف سے 12 ملین سے زائد بچوں نے سکول جانا بند …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Skip to toolbar