Home / انٹر نیشنل / طالبان کا تباہ شدہ امریکی فوجی سازو سامان کی مرمت کا اعلان

طالبان کا تباہ شدہ امریکی فوجی سازو سامان کی مرمت کا اعلان

Mine-resistant, ambush-protected vehicles -- MRAPs -- like these are some of the more than $7 billion in equipment the U.S. Army is dismantling and selling as scrap in Afghanistan.

طالبان کا تباہ شدہ امریکی فوجی سازو سامان کی مرمت کا اعلان
کابل (ڈیلی پاکستان آن لائن) طالبان کا کہنا ہے کہ امریکہ کوفوجی سازو سامان تباہ کرنے کا کوئی اختیار نہیں تھا تاہم انہوں نے دعویٰ کیا ہے کہ وہ جلد بہت ساری گاڑیوں اور ہوائی جہازوں کو دوبارہ قابل استعمال بنا لیں گے۔لیکن وزیر دفاع بین والیس نے کہا کہ انہیں یقین نہیں ہے کہ وہ طیاروں کے بیڑے کودوبارہ قابل استعمال ہونے کے بارے میں فکرمند ہیں کیونکہ انہیں قابل استعمال بنانے کے لیے کثیر رقم کی ضرورت ہو گی جو طالبان کے پاس نہیں ہے۔ انہوںنے مزید کہا ہے کہ برطانیہ نے افغانستان میں صرف چند گاڑیاں چھوڑی تھیں۔ مسٹر والیس نے دی اسپیکٹر کو بتایا کہ “خطرہ یہ ہے کہ وہ اسے روسی اسلحہ ساز کمپنی ویگنر گروپ یا اس جیسی دیگر نجی کمپنیوں کو یہ فوجی سازوسامان فروخت کر سکتے ہیں اور یہ کسی حد تک حقیقت پسندانہ امکان ہے۔طالبان نے چند دن قبل قبضے میں لیے امریکی اسلحے کی ایک پریڈ کے دوران نمائش بھی کی تھی۔ امریکی فوجی حکام نے بتایا کہ اس کے فوجیوں نے پیر کی رات کابل ایئرپورٹ سے نکلنے سے قبل 70 بارودی سرنگوں والی گاڑیاں ، 27 ہمویز اور 73 طیارے مستقل طور پر ناقابل استعمال بنا دیے تھے اور اس میں میزائل دفاعی نظام کو تھرمائٹ بموں سے اڑانا بھی شامل تھا۔امریکی سینٹرل کمانڈ کے سربراہ جنرل فرینک میک کینزی کا دعویٰ تھا کہ امریکہ کی طرف سے ناکارہ بنائے گئے سازو سامان کو کبھی بھی دوبارہ استعمال کے قابل نہیں بنایا جا سکتا اور خواہ کسی کی بھی مدد لی جائے اس کو ورکنگ آرڈر بر بحال نہیں کیا جا سکتا۔ لیکن طالبان کمانڈروں نے دعویٰ کیا کہ وہ غیر ملکی انجینئرز کو ان کی مرمت میں مدد کے لیے مدعو کرنے کے لیے تیار ہیں۔ ہم اپنی تکنیکی ٹیم کے ساتھ اس کی مرمت کریں گے ، اور اگر ہم نہیں کر سکتے تو ہم بین الاقوامی شراکت داروں سے مدد مانگیں گے۔ ریپبلکن امریکی سینیٹر بل ہیگرٹی نے دی ٹیلی گراف کو بتایا کہ ترک کیا گیا ہتھیار وسطی ایشیا کو غیر مستحکم کر سکتا ہے ، اور پینٹاگون سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ انہیں تباہ کرنے یا بازیافت کرنے کا منصوبہ بنائے۔ انہوں نے مزید کہا ہے کہ اگر طالبان اس اسلحے کو خود استعمال نہ کرسکے تو وہ سب سے زیادہ بولی لگانے والوں کو فروخت کر دیں گے۔ یہ اسلحہ ایسے ممالک کے بھی ہاتھ لگ سکتا ہے جو امریکہ کے دوست نہیں ہیں اور وہ انہیں ریورس انجنئیرنگ کی مدد سے ایسا اسلحہ خود بنانے کے قابل ہو سکتے ہیں۔

About Daily Pakistan

Check Also

نائیجیریا میں اغوا کے خوف سے 12 ملین سے زائد بچوں نے سکول جانا بند کر دیا

نائیجیریا میں اغوا کے خوف سے 12 ملین سے زائد بچوں نے سکول جانا بند …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Skip to toolbar