Breaking News
Home / انٹر نیشنل / 2020 کے آخر تک جنگ زدہ یمن میں غذائیت کا شکار بچوں کی تعداد 2.4 ملین ہوجائے گی.یونیسیف

2020 کے آخر تک جنگ زدہ یمن میں غذائیت کا شکار بچوں کی تعداد 2.4 ملین ہوجائے گی.یونیسیف

فوری امداد نہ ملنے پر لاکھوں یمنی بچے بھوک سے مرسکتے ہیں، یونیسیف

برلن ۔ (ڈیلی پاکستان آن لائن) اقوام متحدہ کے بچوں بارے فنڈ (یونیسیف) نے کہا ہے کہ 2020 کے آخر تک جنگ زدہ یمن میں غذائیت کا شکار بچوں کی تعداد 2.4 ملین ہوجائے گی جبکہ خطرہ ہے کہ فوری امداد نہ ملنے پر لاکھوں یمنی بچے بھوک سے مرسکتے ہےں۔
یونیسیف کی جانب سے جاری رپورٹ کے مطابق جنگ زدہ ملک یمن میں پانچ سال سے کم عمر کے غذائیت کا شکار بچوں کی تعداد 20 فیصد ےعنی 2.4 ملین تک بڑھ سکتی ہے اگر بین الاقوامی برادری نے امداد میں بڑے پیمانے پر اضافہ نہ کےا تو یمن میں لاکھوں بچوں غذائی قلت کا شکار ہو جائیں گے ۔

رپورٹ کے مطابق یونیسف کی یمن کی نمائندہ سارہ بیسوولو کنیانتی نے کہا کہ اگر ہم نے فوری طور پر مالی اعانت حاصل نہ کی تو بھوک کے باعث لاکھوں بچے مر جائیں گے ،یونیسف کو انسانی ہمدردی کے اس ردعمل کے لئے تقریبا 461 ملین ڈالر کی ضرورت ہو گی۔

User Rating: Be the first one !

About Daily Pakistan

Check Also

امریکی کانگریس ایوان نمائندگان کی اسپیکر نینسی پلوسی نے امریکی صدر ٹرمپ کو پاگل قرار دے دیا

واشنگٹن: 9 جنوری ( ڈیلی پاکستان آن لائن) امریکی کانگریس ایوان نمائندگان کی اسپیکر نینسی …

Skip to toolbar