Breaking News
Home / انٹر نیشنل / ہانگ کانگ میں چین کے قومی ترانے کی بے حرمتی کےخلاف قانون منظور

ہانگ کانگ میں چین کے قومی ترانے کی بے حرمتی کےخلاف قانون منظور

Riot police officers clash with protesters in Hong Kong, on Wednesday, May 27, 2020. China officially has the broad power to quash unrest in Hong Kong, as the country's legislature on Thursday nearly unanimously approved a plan to suppress subversion, secession, terrorism and seemingly any acts that might threaten national security in the semiautonomous city. (Lam Yik Fei/The New York Times)

ہانگ کانگ میں چین کے قومی ترانے کی بے حرمتی کےخلاف قانون منظور

بچوں کو قومی ترانے کی تاریخ بھی یاد کرائی جائے گی،بے حرمتی پر تین سال قید 6450ڈالر جرمانہ کا قانون منظور

ہانگ کانگ سٹی (ڈیلی پاکستان آن لائن)ہانگ کانگ کی پارلیمنٹ نے چین کے قومی ترانے سے متعلق متنازع قانون منظور کرلیا جس کے تحت ترانے کی بے حرمتی یا تضحیک قابل گرفت جرم ہوگا۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق مذکورہ قانون کی منظوری ایسے وقت پر دی گئی ہے جب چین کی پارلیمان نے کثرت رائے سے ہانگ کانگ پر قومی سلامتی کی قانون سازی کے براہ راست نفاذ کی منظوری دے دی تاکہ شورش، بغاوت، دہشت گردی اور غیر ملکی مداخلت سے نمٹا جاسکے۔

واضح رہے کہ قومی سلامتی کی قانون سازی کے حوالے سے امریکا، برطانیہ، آسٹریلیا اور کینیڈا نے چین کی مخالفت کی تھی۔

قومی ترانے کے بل میں حکم دیا گیا کہ ہانگ کانگ میں پرائمری اور سیکنڈری اسکول کے طلبہ کو مارچ آف دی والنٹیئرز قومی ترانہ سکھایا جائے گا اور اس کو تاریخی واقعات اور آداب کے ساتھ یاد کرایا جائے گا۔

امریکا اور برطانیہ کی معاملے پر تنقید سے چین مشتعل نظر آتا ہے اور ناقدین کا خیال ہے کہ قانون کے نفاذ سے نیم خود مختار ہانگ کانگ کی محدود آزادی ختم ہوجائے گی۔

قومی ترانے سے متعلق قانون کے مطابق اگر کوئی چین کے قومی ترانے کی بے حرمتی کے جرم کا ارتکاب کرتا ہے تو اسے 3 سال قید اور 6 ہزار 450 ڈالر کا جرمانہ ہوسکتا ہے۔

رپورٹ کے مطابق ہانگ کانگ کی پارلیمنٹ میں اس وقت خلل پیدا ہوا جب جمہوریت کے حامی دو قانون سازوں نے مجوزہ بل پر زیادہ ترامیم کے خلاف احتجاج کیا اور واک آوٹ کرگئے۔قانون ساز ایڈی چو اور رے چن چیمبر کے سامنے پہنچے اور انہوں نے بدبودار مواد پھینک دیا جس کے فوراً بعد محافظوں نے دونوں قانون سازوں کو اپنی گرفت میں لے لیا۔بعدازاں ایڈی چو نے کہا کہ ایک قاتل ریاست ہمیشہ کے لیے بدبودار ہوتی ہے، آج ہم نے جو کچھ کیا وہ دنیا کو یہ یاد دلانے کے لیے ہے کہ 31 سال قبل چینی کمیونسٹ پارٹی کو اپنے ہی لوگوں کو مارنے کے الزام میں کبھی معاف نہیں کرنا چاہیے۔

User Rating: Be the first one !

About Daily Pakistan

Check Also

بیگم صفدراعوان کا ”ووٹ کو عزت دو“کا نعرہ دراصل ”مجھے لندن جانے دو“کی دہائی ہے‘ فیاض الحسن چوہان

بیگم صفدراعوان کا ”ووٹ کو عزت دو“کا نعرہ دراصل ”مجھے لندن جانے دو“کی دہائی ہے‘ …

Skip to toolbar