Breaking News
Home / بزنس / پنجاب کے آئندہ مالی سال کے بجٹ میں 56ارب روپے سے زائد کے ٹیکس ریلیف پیکج کی تجویز

پنجاب کے آئندہ مالی سال کے بجٹ میں 56ارب روپے سے زائد کے ٹیکس ریلیف پیکج کی تجویز

پنجاب کے آئندہ مالی سال کے بجٹ میں 56ارب روپے سے زائد کے ٹیکس ریلیف پیکج کی تجویز

ہیلتھ انشورنس ، ڈاکٹرز کی کنسلٹنسی ،ہسپتالوں پر ٹیکس 16اور5فیصد سے کم کرکے صفر ،20سے زائد سروسز پر ٹیکس ریٹ16فیصد سے 5فیصد کم کرنےکی تجویز

پراپرٹی ٹیکس کی ادائیگی دو اقساط میں کی جا سکے گی، انٹرٹینمنٹ ڈیوٹی کی شرح کو 20فیصد سے کم کرکے 5فیصد ،سینما گھروں کوانٹرٹینمنٹ ڈیوٹی سے استثنیٰ

نئے ویلیو ایشن ٹیبل کا اطلاق بھی ایک سال کے لئے موخر،سٹیمپ ڈیوٹی کی موجودہ شرح کو 5فیصد سے کم کر کے 1فیصد کرنے کی تجویز

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) صوبائی حکومت نے مالی سال 21-2020 کے لیے پنجاب کا تقریباً 22 کھرب 40 ارب روپے کا بجٹ پیش کردیا گیا۔

کورونا وائرس کے پیش نظر ایک مقامی ہوٹل میں منعقدہ صوبائی اسمبلی کے اجلاس میں اپوزیشن کی جانب سے سخت شور شرابہ اور نعرے بازی دیکھنے میں آئی۔

صوبائی اسمبلی کے اجلاس میں بجٹ کی تفصیلات سے آگاہ کرتے ہوئے صوبائی وزیر خزانہ نے بتایا کہ مالی سال 21-2020 کے بجٹ میں کورونا وائرس کے باعث پڑنے والے اثرات سے نمٹنے کے لیے ایک کھرب 6 ارب روپے رکھے گئے ہیں تاہم اس میں ضلعی حکومتوں کے اعداد و شمار شامل نہیں ہیں۔

پنجاب کے آئندہ مالی سال 2020-21کے بجٹ میں 56ارب روپے سے زائد کے ٹیکس ریلیف پیکج کی تجویز دی گئی ہے ۔

آئندہ مالی سال کے بجٹ میں جی ایس ٹی آن سروسز کی مدمیں دئیے جانے والے ریلیف پیکج کی تفصیلات کے مطابق ہیلتھ انشورنس اور ڈاکٹرز کی کنسلٹنسی فیس او رہسپتالوں پر ٹیکس کی شرح جو بالترتیب 16اور5فیصد تھی کوکم کرکے صفر فیصد کرنے ،20سے زائد سروسز پر ٹیکس ریٹ16فیصد سے 5فیصد کم کرنے کی تجویز ہے جن میں چھوٹے ہوٹلزاور گیسٹ ہاﺅسز ، شادی ہالز، لانز، پنڈال اورشامیانہ سروسز و کیٹرز، آئی ٹی سروسز، ٹورر آپریٹرز ، پراپرٹی ڈیلرز، رینٹ اے کار سروس،کیبل ٹی وی آپریٹرز،ٹریٹمنٹ آف ٹیکسٹائل اینڈ لیدر ، زرعی اجناس سے متعلقہ کمیشن ایجنٹس ، آڈٹنگ ، اکاﺅنٹنگ اینڈ ٹیکس کنسلٹنسی سروسز، فوٹوگرافی اور پارکنگ سروسز شامل ہیں۔

پراپرٹی بلڈرز اور ڈویلپرز سے بالترتیب 50روپے فی مربع فٹ اور100روپے فی مربع گز ٹیکس وصول کرنے کی تجویز ہے ۔جو شخص پراپرٹی اور ڈویلپر کے طو رپر ٹیکس اداکرے گا اس کو کنسٹرکشن سروسز سے چھوٹ ہو گی ۔

ریسٹورنٹ او ربیوٹی پارلرز پر بذریعہ کیش ادائیگی کرنے والے صارفین سے 16فیصد جبکہ کریڈٹ یا ڈیبٹ کارڈ سے ادائیگی کی صورت میں 5فیصد ٹیکس ریٹ وصول کئے جانے کی تجویز ہے جو کہ معیشت کو دستاویز کرنے میں مدددے گی ۔

آئندہ مالی سال کےلئے پراپرٹی ٹیکس کی ادائیگی دو اقساط میں کی جا سکے گی اور 30ستمبر 2020تک مکمل ٹیکس کی ادائیگی کی صورت میں ٹیکس دہندگان کو 5فیصد کی بجائے 10فیصد ریبیٹ دیا جائے گا اور مالی سال 2020-21کے سرچارج کی وصولی میںبھی مکمل چھوٹ ہو گی ۔

انٹرٹینمنٹ ڈیوٹی کی شرح کو 20فیصد سے کم کرکے 5فیصد کئے جانے کی تجویز ہے ۔ تمام سینما گھروں کو30جون2021تک انٹرٹینمنٹ ڈیوٹی سے مستثنیٰ کئے جانے کی تجویز ہے ۔ پراپرٹی ٹیکس کے نئے ویلیو ایشن ٹیبل کا اطلاق بھی ایک سال کے لئے موخرکر دیا گیا ہے ۔ گاڑیوں کی رجسٹریشن اور ٹوکن ٹیکس کی مکمل ادائیگی کی صورت میں 10فیصد کی بجائے 20فیصد ریبیٹ دیا جائے گا اور پنجاب ای پے پورٹل کے تحت آن لائن ادائیگی کی صورت میں 5فیصد خصوصی رعایت دی جائے گی ۔ آئندہ مالی سال میں سٹیمپ ڈیوٹی کی موجودہ شرح کو 5فیصد سے کم کر کے 1فیصد کرنے کی تجویز دی گئی ہے ۔

User Rating: Be the first one !

About Daily Pakistan

Check Also

حکومت پاکستان دسمبر 2022تک پاکستان میں فائیو جی ٹیکنالوجی متعارف کرانے کے لئے کوشاں ہے، امین الحق

اسلام آباد۔ 23نومبر (ڈیلی پاکستان آن لائن ) :وفاقی وزیر برائے آئی ٹی و ٹیلی …

Skip to toolbar