Breaking News
Home / انٹر نیشنل / مہاجرین کو دریا میں ڈبو کرہلاک کرنے کے ثبوت ایران کے حوالے

مہاجرین کو دریا میں ڈبو کرہلاک کرنے کے ثبوت ایران کے حوالے

مہاجرین کو دریا میں ڈبو کرہلاک کرنے کے ثبوت ایران کے حوالے

کابل (ڈیلی پاکستان آن لائن) گذشتہ روز ایک اعلی سطحی ایرانی وفد نے افغان تارکین وطن کی وجہ سے ایرانی سرحدی محافظوں کو معزول کرنے کے معاملے پر تبادلہ خیال کرنے کے لیے کابل کا دورہ کیا۔ایرانی وزارت خارجہ کے وفد کی قیادت اسسٹنٹ وزیر محسن بہاروند کر رہے تھے۔

اس وفد نے کابل میں قائم مقام افغان وزیر خارجہ حنیف اتمر سے اس واقعے پر تبادلہ خیال کیا۔

ایرانی وفد اور افغان عہدیداروں کے درمیان ہونے والی بات چیت میں چند ہفتے قبل ایرانی بارڈر سیکیورٹی فورسز کے ہاتھوں درجنوں تارکین وطن کو زندہ دریا برد کرنے کے معاملے پر بات چیت کی گئی۔

ذرائع کے مطابق افغان حکام نے ایرانی وفد کو مہاجرین کو دریا میں ڈبونے میں ایرانی بارڈر فورسز کے ملوث ہونے کے ثبوت فراہم کیے۔

اتمر نے وفد کے ساتھ اس واقعے میں افغان فریق کی طرف سے کی جانے والی تحقیقات کے مختلف مراحل اور اس تک پہنچنے والے دستاویزات پر بات چیت کی۔اتمر نے ایرانی حکومت سے مشترکہ تحقیقات پر زیادہ توجہ دینے کا مطالبہ کیا۔بیان میں کہا گیا ہے کہ ملاقات کے دوران ایرانی عہدیار بہار وند نے اس واقعے کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایرانی عوام اور حکومت کی جانب سے اس فعل کو مسترد کردیا گیا ہے۔انہوں نے زور دے کر کہا کہ تہران اس واقعے کا مطالعہ کرنے اور انصاف کو یقینی بنانے کے لیے افغان فریق کے ساتھ مشترکہ طور پر آگے بڑھنے کے لئے پرعزم ہے۔

User Rating: Be the first one !

About Daily Pakistan

Check Also

حکومت پاکستان دسمبر 2022تک پاکستان میں فائیو جی ٹیکنالوجی متعارف کرانے کے لئے کوشاں ہے، امین الحق

اسلام آباد۔ 23نومبر (ڈیلی پاکستان آن لائن ) :وفاقی وزیر برائے آئی ٹی و ٹیلی …

Skip to toolbar