Breaking News
Home / صفحۂ اول / ملک میں کوچنگ کے شعبے کو بہتر بنائے بغیر میں کھیلوں کی ترقی ناممکن ہے، قومی کوچ رفیق احمد

ملک میں کوچنگ کے شعبے کو بہتر بنائے بغیر میں کھیلوں کی ترقی ناممکن ہے، قومی کوچ رفیق احمد

ملک میں کوچنگ کے شعبے کو بہتر بنائے بغیر میں کھیلوں کی ترقی ناممکن ہے، قومی کوچ رفیق احمد

پاکستانی اتھلیٹ کسی سے کم نہیں بلکہ وسائل کی کمی ہے، پھر بھی ہمارے کھلاڑی کم وسائل کے باجود بین الاقوامی سطح پر ملک کا نام روشن کررہے ہیں،بیان

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) قومی اتھلیٹکس کوچ رفیق احمد نے کہا ہے کہ ملک میں کوچنگ کے شعبے کو بہتر بنائے بغیر میں کسی بھی کھیلوں کی ترقی ناممکن ہے ۔

انہوں نے گذشتہ روز اپنے ایک بیان میں کہا کہ ملک میں اتھلیٹکس کا بے پناہ ٹیلنٹ موجود ہے اور اس ٹیلنٹ کو بروئے کار لانے کے لئے پاکستان اتھلیٹکس فیڈریشن کے صدر میجرجنرل ریٹائرڈ محمد اکرم ساہی اور ان کی ٹیم ہر ممکن کوشش کررہی ہے تاہم اس کے ساتھ ساتھ کھیلوں کی ترقی کے لئے حکومت کو بھی اپنی ذمہ داری ادا کرنی ہوگی۔

انہوں نے کہا کہ پاکستانی اتھلیٹ کسی سے کم نہیں بلکہ وسائل کی کمی ہے، انہوں نے کہا کہ پھر بھی ہمارے کھلاڑی کم وسائل کے باجود بین الاقوامی سطح پر ملک کا نام روشن کررہے ہیں، انہوں نے کہا کہ گراس روٹ سطح پر کھیلوں کی ترقی کے لئے تعلیمی اداروں کا بڑا اہم کردار ہوتا ہے لیکن اس وقت تعلیمی اداروں میں حکومت کی جانب سے کھیلوں کے انعقاد کو یقینی بنانے کی ضرورت ہے، انہوں نے کہا کہ فیڈریشن اکیلی کچھ نہیں کرسکتی جب تک حکومت ساتھ نہ دے۔

انہوں نے کہا کہ فیڈریشن سال میں باقاعدگی سے قومی سنیئر، یوتھ اور جونیئر چمپئن شپ کے الگ الگ مقابلے کروانے کے علاوہ کوچنگ کورسز کا بھی انعقاد کرتی ہے تاہم حکومت کی جانب سے سالانہ گرانٹ بہت کم ملتی ہے جس میں تو ایک ایونٹ بھی کروانا مشکل ہوتا ہے، سابق قومی چیمپئن اور انٹرنیشنل اتھلیٹ رفیق احمد نے پاکستان اتھلیٹکس فیڈریشن کے صدر میجرجنرل ریٹائرڈ محمد اکرم ساہی کی ملک میں اتھلیٹکس کے کھیل کی ترقی کے لئے کاوشوں اور کوششوں کو سراہتے ہوئے کہا کہ ان کی دن رات محنت سے ان تمام ایونٹس کا کامیاب انعقاد ہوتا ہے، کوچنگ کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ کوچنگ کے شعبے کو بہتر بنانے کے لئے کوالیفائڈ کوچز کی خدمات بہت ضروری ہوتی ہیں، اکرم ساہی پاکستان اتھلیٹکس فیڈریشن کے صدر ہونے کے ساتھ ساتھ ساﺅتھ ایشین اتھلیٹکس فیڈریشن کے چیئرمین بھی ہیں نے اپنی ذاتی کاوشوں سے روواں سال اپریل میں کرونا وائرس کے باعث آن لائن سیف اتھلیٹکس ٹیکنیکل آفیشلز کورس اور سیمینار کا کامیاب انعقاد کروایا، جس میں پاکستان سمیت نیپال، بھوٹان، مالدیپ، سری لنکا، افغانستان، بنگلہ دیش اور بھارت کے 800 سے زائد شرکاءنے حصہ لیا، اس کورس میں پاکستان کے دس ٹیکنیکل آفیشلز نے شرکت کی، ان شرکاءکو دنیا بھر سے تجربہ کار لیکچرارز نے آن لائن لیکچرز دیئے، جس سے پاکستانی ٹیکنیکل آفیشلز کو نئی نئی ٹیکنیک اور نئے قوانین سے آگاہی حاصل ہوئی۔

کرونا وائرس کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ کرونا وائرس کے باعث پوری دنیا پریشان ہے اور اس سے بچنے کے لئے کھلاڑی سماجی فاصلوں کا خیال رکھیں اور حکومتی احتتاطی تدابیر پر عمل کرتے ہوئے اپنی تربیت اور فٹنس پر توجہ دیں تاکہ ان کی قوت مدافعت میں اضافہ ہو، واضح رہے کہ پاکستان واپڈا سے تعلق رکھنے والے کوچ رفیق احمد نے قومی چمپئن ہونے کے ساتھ ساتھ کئی بین الاقوامی سطح پر چاندی اور کانسی کے میڈلز حاصل کررکھے ہیں.۔

User Rating: Be the first one !

About Daily Pakistan

Check Also

کور کماندرز کانفرنس ،جیواسٹریٹیجک، علاقائی اور قومی سلامتی کی صورتحال پرتفصیلی تبادلہ خیال

کور کماندرز کانفرنس ،جیواسٹریٹیجک، علاقائی اور قومی سلامتی کی صورتحال پرتفصیلی تبادلہ خیال امن کےلئے …

Skip to toolbar