Breaking News
Home / شوبز / شوبز سے وابستہ شخصیات کاوفاقی بجٹ میں فلم انڈسٹری کو نظر انداز کرنے پر شدید مایوسی کا اظہار

شوبز سے وابستہ شخصیات کاوفاقی بجٹ میں فلم انڈسٹری کو نظر انداز کرنے پر شدید مایوسی کا اظہار

شوبز سے وابستہ شخصیات کاوفاقی بجٹ میں فلم انڈسٹری کو نظر انداز کرنے پر شدید مایوسی کا اظہار

موجودہ صورتحال میں فلم انڈسٹری کو حکومت کی سرپرستی کی اشد ضرورت تھی ،بجٹ منظوری سے قبل فنڈز مختص کئے جائیں
فلم انڈسٹری کو پاﺅں پر کھڑا کرنے کےلئے دو ارب روپے سے خصوصی فنڈ قائم کیا جائے، جوائنٹ ونچر کا فارمولہ لایا جائے

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) شوبز سے وابستہ شخصیات نے آئندہ مالی سال کے وفاقی بجٹ میں فلم انڈسٹری کو نظر انداز کرنے پر شدید مایوسی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ موجودہ صورتحال میں فلم انڈسٹری کو حکومت کی سرپرستی کی اشد ضرورت تھی ۔

سینئر ہدایتکار سید نور نے کہا کہ یہ پہلا موقع نہیں ہے بلکہ ہر دور میں فلم انڈسٹری کو نظر انداز کیا گیا اور پاکستان کی فلم انڈسٹری نے جتنا بھی مقام بنایا ہے یہ اس سے وابستہ لوگوں نے اپنے بل بوتے پر حاصل کیا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ حکومت کو چاہیے کہ بجٹ کی منظوری سے قبل فلم انڈسٹری کےلئے فنڈز مختص کئے جائیں۔ سینئر اداکار جاوید وہدایتکار جاوید شیخ نے کہا کہ بجٹ میں فلم انڈسٹری اور اس سے جڑے ہوئے شعبوں کا سرے سے کوئی ذکر نہیں جو تشویشن کی بات ہے ۔

انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت میں حکومت کو کسی شعبے کو نظر انداز نہیں کرنا چاہیے ،فلم انڈسٹری کو ترقی دے کر ہزاروں لوگوں کو روزگار کے مواقع دئیے جا سکتے ہیں۔

سینئر اداکار قوی خان نے کہا کہ ایسا لگتا ہے کہ فلم انڈسٹری کا کوئی والی وارث نہیں اور اور پھر ترقی کی کیا امیدیں رکھی جا سکتی ہیں۔ اداکار معمر رانا نے کہا کہ کورونا وائرس کی وباءکے دوران حکومت نے جس طرح دیگر شعبوں کےلئے ریلیف پیکج دیا فلم انڈسٹری بھی اس کی مستحق تھی لیکن کوئی اعلان نہیں کیا گیا ۔ بجٹ میں بھی فلم انڈسٹری کے حوالے سے کوئی تجویز شامل نہیں ۔

اداکار حیدر سلطان نے کہا کہ ہر دور حکومت میں فلم انڈسٹری کے ساتھ سوتیلی ماں جیسا سلوک کیا گیا جس کے نتائج آج سب کے سامنے ہیں ۔ اداکارہ میرا نے کہا کہ حکومت فلم انڈسٹری کو پاﺅں پر کھڑا کرنے کےلئے کم از کم دو ارب روپے سے خصوصی فنڈ قائم کرے جس سے جوائنٹ ونچر کے ذریعے نئی فلموں کےلئے سرمایہ کاری کا آغاز کیا جائے۔ اداکارہ ریشم نے کہا کہ حکومت فلم انڈسٹری کی سرپرستی کرے تو ہم ہمسایہ ملک کی انڈسٹری کو پیچھے چھوڑ سکتے ہیں لیکن اس کے لئے شرط ہے کہ حکومت مستقل مزاجی دکھاتے ہوئے فلم انڈسٹری کےلئے پالیسی بنائے اور اس کےلئے بجٹ بھی مختص کرے۔

User Rating: Be the first one !

About Daily Pakistan

Check Also

بیگم صفدراعوان کا ”ووٹ کو عزت دو“کا نعرہ دراصل ”مجھے لندن جانے دو“کی دہائی ہے‘ فیاض الحسن چوہان

بیگم صفدراعوان کا ”ووٹ کو عزت دو“کا نعرہ دراصل ”مجھے لندن جانے دو“کی دہائی ہے‘ …

Skip to toolbar