Breaking News
Home / شوبز / سلور سکرین اداکارہ صبیحہ خانم طویل علالت کے بعد 85برس کی عمر میں انتقال کر گئیں،امریکی ریاست ورجینیا میں مقیم تھیں

سلور سکرین اداکارہ صبیحہ خانم طویل علالت کے بعد 85برس کی عمر میں انتقال کر گئیں،امریکی ریاست ورجینیا میں مقیم تھیں

سلور سکرین اداکارہ صبیحہ خانم طویل علالت کے بعد 85برس کی عمر میں انتقال کر گئیں،امریکی ریاست ورجینیا میں مقیم تھیں

مرحومہ کو بلڈ پریشر اور شوگر سمیت کئی بیماریاں لاحق تھیں،نگار ،صدارتی تمغہ حسن کارکردگی سمیت متعدد ایوارڈز سے نوازا گیا

صبیحہ خانم کے انتقال سے فلمی تاریخ کا سنہر باب بند ہو گیا، سنگیتا بیگم، نشو بیگم، بہار بیگم، سید نور، قوی خان و دیگر کا اظہا رتعزیت

لاہور/ورجینیا( ڈیلی پاکستان آن لائن) سلور سکرین اداکارہ صبیحہ خانم طویل علالت کے بعد 84برس کی عمر میں انتقال کر گئیں، انہیں بلڈ پریشر اور شوگر سمیت کئی بیماریاں لاحق تھیں،فلموں میں لازوال اداکاری کے سبب سابق انہیں نگار اور صدارتی تمغہ حسن کارکردگی سمیت متعدد ایوارڈز سے نوازا گیا.

شوبز شخصیات نے اداکارہ صبیحہ خانم کے انتقال پر اپنے گہرے رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان جیسی اداکارہ صدیوں میں پیدا ہوتی ہے ۔

پاکستانی فلم انڈسٹری کی پہلی سپر اسٹار صبیحہ خانم کا اصل نام مختار بیگم تھا، وہ 16اکتوبر1936 میں گجرات میں پیدا ہوئیں، ان کے والدین محمد علی ماہیا اور بالو بیگم تھیٹر میں کام کرتے تھے۔ انہوں نے 1950 سے 90 کی دہائی تک پاکستانی فلم انڈسٹری پر راج کیا،صبیحہ خانم نے اپنے فلمی کرئیر کا آغاز 1950 میں فلم ”بیلی“سے کیا، 1954 میں فلم ”گمنام “سے ان کی شہرت کو چار چاند لگ گئے، پھر 1956 میں انہوں نے فلم ”دلا بھٹی“ میں نوراں کا کردار ادا کیا جو شائقین فلم کے دلوں پر نقش ہو گیا،اس کے بعد متعدد کامیاب فلموں نے انہیں پاکستان کی کامیاب ترین ہیروئن بنا دیا،پہلی پاکستانی گولڈن جوبلی فلم بھی صبیحہ خانم کے حصے میں آئی۔صبیحہ خانم پاکستانی سلور سکرین کی پہلی خاتون تھیں جنہیں صدارتی تمغہ برائے حسن کارکردگی ملا جبکہ انہیں نگار سمیت دیگر ایوارڈز سے بھی نوازا گیا۔

انہوں نے شکوہ، دیور بھابی، ایک گناہ ،سنگدل ، وعدہ، پاسبان، شیخ چلی، سات لاکھ، گمنام، دیوانہ، آس پاس، سسی، سوہنی، چھوٹی بیگم، داتا، حاتم، آج کل، مکھڑا، عشق لیلیٰ، دل میں تو، ایاز، محفل، پرواز، طوفان، موسیقار، سرفروش جیسی درجنوں فلموں میں شاندار اداکاری کی۔ صبیحہ خانم کے کرئیر کی آخری فلم سارنگا تھی جو 1994 میں ریلیز ہوئی۔صبیحہ خانم کی سنوش کمار کے ساتھ جوڑی نے خوب شہرت حاصل کی اور انہی سے ان کی شادی بھی ہوئی۔

صبیحہ خانم امریکی ریاست ورجینیا میں مقیم تھیں، انہیں شوگر اور بلڈ پریشر سمیت کئی امراض لاحق تھیں جس کے سبب طویل عرصے سے بستر علالت پر تھیں اور گزشتہ روز 84 برس کی عمر میں خالق حقیقی سے جا ملیں۔ صبیحہ خانم کی نواسی اور ماڈل سحرش خان نے نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے انتقال کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ صبیحہ خانم بلڈ پریشر اور شوگر سمیت کئی بیماریوں میں مبتلا تھیں۔

سینئر اداکارہ وہدایتکارہ سنگیتا بیگم، سینئر ہدایتکار سید نور، سینئر اداکارہ بہار بیگم ،نشو بیگم ، مصطفی قریشی، قوی خان ، جاوید شیخ ، ندیم بیگ ، بابرہ شریف ،شاہدہ منی ،میرا، ثنا، ریشم ، بابر ، شان ،سعود،صاحبہ، سلیم شیخ ، صائمہ نور سمیت دیگر نے صبیحہ خانم کے انتقال پر گہرے رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ انہوںنے اپنے پورے کرئیر میں لازوال کردار نبھائے ۔ ان کی اداکاری دیکھنے والوں کو اپنے سحر میں مبتلا کر لیتی تھی ۔ انہوں نے کہا کہ صبیحہ خانم کے انتقال سے فلمی تاریخ کاسنہرا باب بند ہو گیا۔

User Rating: Be the first one !

About Daily Pakistan

Check Also

کور کماندرز کانفرنس ،جیواسٹریٹیجک، علاقائی اور قومی سلامتی کی صورتحال پرتفصیلی تبادلہ خیال

کور کماندرز کانفرنس ،جیواسٹریٹیجک، علاقائی اور قومی سلامتی کی صورتحال پرتفصیلی تبادلہ خیال امن کےلئے …

Skip to toolbar