Home / صحت / سرائے مغل،پتوکی سٹی،پھول نگر،حبیب آباد کے گردو نواح میں مصنوعی دودھ کی فروخت کا دھندہ عروج پرپہنچ گیا

سرائے مغل،پتوکی سٹی،پھول نگر،حبیب آباد کے گردو نواح میں مصنوعی دودھ کی فروخت کا دھندہ عروج پرپہنچ گیا

سرائے مغل،پتوکی سٹی،پھول نگر،حبیب آباد کے گردو نواح میں مصنوعی دودھ کی فروخت کا دھندہ عروج پرپہنچ گیا

پتوکی اپریل 26 (ڈیلی پاکستان آن لائن) شہریوں محمودخالدگھمن،دانش سلیم،آصف جاوید،شفیق چیتا،محمد نوید ودیگر نے بتایا کہ مصنوعی دودھ کا کاروبار عروج پر گھناﺅنے کاروبار کو روکنے کے لئے کمیٹیاں تشکیل دی جائیں جو ہرشہر میں دودھ چیک کر کے فروخت ہونے دیں،مگر بااثر افراد مقامی انتظامیہ کو رشوت دےکر چیکنگ نہیں ہونے دیتے.

پتوکی میں کئی بااثر افراد اس دھندے سے کروڑ پتی بن گئے جو ہرضلع میں دودھ کو چیک کر کے فروخت ہونے دیں.

اسسٹنٹ کمشنرپتوکی اسامہ شہرون نیازی اور فوڈ انتظامیہ دانستہ طور پر خاموش نظر آتی ہے،سرائے مغل،پتوکی سٹی،پھول نگر،حبیب آباد کے گردو نواح میں مصنوعی دودھ کی فروخت کا دھندہ عروج پرپہنچ چکاہے،شہر کے بااثر افراد کی جانب سے چند روپے کی خاطر مضر صحت دودھ فروخت کر کے انسانی جانوں سے کھیلا جا رہا ہے زہریلے دودھ کے استعمال سے کئی مہلک اور پیٹ کی بیماریاں پھیل رہی ہیں یہ دودھ کی شکل میں خاموش زہر دودھ تحصیل پتوکی سے دوسرے بڑے شہروں لاہور،اسلام آباد میں بھی سپلائی کیا جا رہا ہے دودھ کو ٹھنڈا کر نے کے نام پر ایک چلر بنایا جاتا ہے جبکہ باہر دکھاوے کے لئے چلر ہوتا ہے مگر اندر مضر صحت دودھ تیا ر کیا جاتا ہے جس میں سرف، یوریا کھاد، میٹھا سوڈا، اور کوکنگ آئل کے علاوہ کارومو لین استعمال کی جاتی ہے جس کو مردہ جسم محفوظ رکھنے کے لئے استعمال کیا جاتا ہے وہ اس مصنوعی دودھ میں ڈال کر پیداوار میں اضافہ کیا جاتا ہے اس زہریلے دودھ کے استعمال سے بچوں کی صحت پرانتہائی برے اور خطرناک اثر ہوتا ہے جس سے جلدی اور پیٹ کے امراض جنم لیتے ہیں.

یہ دھندہ پتوکی سٹی و دیگر دیہات میں عروج پر ہے،زہریلے دودھ کے استعمال سے بچوں اور بڑوں میں مہلک بیماریاں پھیلنے سے پتوکی پرائیوٹ اور سرکاری ہسپتال بھر گئے ہیںمختلف تنظیموں نے سیکرٹری فوڈ پنجاب،ڈی سی قصور اور تحصیل انتظامیہ سے اپیل کی ہے کہ اس گھناﺅنے کاروبار کو روکنے کے لئے ٹیمیں تشکیل دی جائیں جو ہرشہر میں دودھ چیک کر کے فروخت ہونے دیں،مگر بااثر افراد مقامی انتظامیہ کو رشوت دےکر چیکنگ نہیں ہونے دیتے پتوکی میں کئی بااثر افراد اس دھندے سے کروڑ پتی بن گئے ہیں ان کے خلاف نہ انتظامیہ ایکشن لے رہی ہے اور نہ ہی نیب پاکستان۔شہریوں نے وزیراعظم اور چیرمین نیب سے اپیل کی ہے کہ فوری ایکشن لیتے ہوئے ان کے اثاثہ جات کی چھان بین کرے کہ چند سالوں میں ایسے لوگ کس طرح سائیکل سے کروڑ پتی بن گئے۔

User Rating: Be the first one !

About Daily Pakistan

Check Also

مفتاح اسماعیل کی جیت اور ان کے ووٹوں کی برتری کیسے کم ہوئی پورے پاکستان نے دیکھا‘ شہباز شریف

مفتاح اسماعیل کی جیت اور ان کے ووٹوں کی برتری کیسے کم ہوئی پورے پاکستان …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Skip to toolbar