Breaking News
Home / انٹر نیشنل / بھارت چین اور پاکستان کیخلاف بیک وقت جنگ نہیں لڑ سکتا ۔رپورٹ

بھارت چین اور پاکستان کیخلاف بیک وقت جنگ نہیں لڑ سکتا ۔رپورٹ

لاہور ( ڈیلی پاکستان آن لائن) جنوبی ایشیاء میں امن کا دشمن بھارت ، امریکہ کی دوستی اور چین کی دشمنی کے ایک ساتھ نہیں نبھا سکتا ، اگر بھارت ، امریکہ کا ساتھ دیتا ہے تو مشرقی علاقے جاتے ہیں ، کئ متنازعہ علاقوں میں جنگ شروع ہوجائیگی اور اگر امریکہ کی بات نہیں مانتا تو افغانستان و دیگر کئ مفادات سے فارغ ہو جائے گا بھارت چین اور پاکستان کیخلاف بیک وقت جنگ نہیں لڑ سکتا ۔چینی پیپلز لبریشن آرمی کے پانچ ہزار فوجی ، ہیوی مشینری ، ہیلی کاپٹرز سمیت لداخ میں کئ کلو میٹر اندر داخل ہو کر بیٹھ چکے ہیں اور بھارتی 72 فوجی زخمی کر کے ہسپتال پہنچا چکے ہیں ۔۔۔ بھارتی آرمی چیف نے ہنگامی دورہ کیا ہے ، اس علاقے کا خطے میں موجود امریکی واحد الائ بھارت تنہائی کا شکار ہے ، چین بار بار بھارت کو خبردار کر رہا تھا کہ امریکہ کے کہنے پر چین کیخلاف کوئی حرکت کی تو بھاری قیمت چکانی پڑے گی ، مگر بھارتی میڈیا مسلسل چین کیخلاف پروپیگنڈہ کرتا رہا ۔ ۔ ۔ سی پیک پر اعتراضات ، رکاوٹیں ، گلگت بلتستان کو واپس لینے کی باتیں ، بلوچستان حملے میں انڈیا کے ملوث ہونے کے شواہد جن پر پاکستان ، چین کی جانب سے سخت رد عمل دینے کا فیصلہ ہوا اور بھارت کو فوری اسی کی سرزمین پر سبق سکھانے کا فیصلہ کیا گیا ۔ ۔ ۔
ارونا چل پردیش ، سکم کے بعد اکسائی چن ( Aksai Chin ) کا علاقہ جو لداخ سے متصل ہے ، یہاں جھڑپیں شروع ہیں ۔ وجہ بنی ارونا چل پردیش کے علاقے میں پل کی تعمیر جو بھارتی افواج کی موومنٹ کے لئے تعمیر کیا گیا ۔ نیپالی علاقے کالا پانی میں سڑک کا افتتاح ، خود ساختہ نقشے کے ذریعے اس علاقے کو بھارتی حصہ ظاہر کیا گیا ۔ ۔ ۔ جموں کشمیر ، لداخ کو یونین ٹیریٹری کا حصہ بنانے کا اعلان ۔ ۔ ۔ اس میں وہ متنازعہ علاقے بھی شامل ہیں جن پر چین دعویٰ کرتا ہے کہ اسکے ہیں ۔پینگیونگ ٹی ایس او جھیل ، گلوان ویلی میں دونوں ممالک کی افواج آمنے سامنے ہیں ۔ یہ علاقہ چینی صوبے سنکیانگ کا حصہ قرار دیا جا رہا ہے ۔ ۔ ۔
کشمیر میں تین اطراف سے چین نے بھارت کا گھیراؤ کیا ہے ۔ ۔ ۔ لائن آف کنٹرول ، سکردو پر افواج پاکستان تعینات ہیں ، اکسائی چن کا علاقہ ۔ ۔ ۔
جنرل باجوہ نے لائن آف کنٹرول کا دورہ کرتے ہوئے ، جوانوں کے ساتھ عید منائی ، عزم کا اعادہ کیا کہ کشمیر کی آزادی کی جدوجہد جاری رہے گی ۔ پاکستانی فوج کے سپہ سالار قمر جاوید باجوہ کا کہنا ہے کہ بھارت ، چین ، پاکستان دونوں کیخلاف سازشیں کر رہا ہے ، اب یہ بھارت پر بھاری پڑنے جا رہا ہے ۔ اگر بھارت ، لداخ میں چین کیخلاف کارروائی کرتا ہے تو پاکستان ، کشمیر میں بآسانی کارروائی کر سکتا ہے ۔
ایک طرف امریکہ ساؤتھ چین میں تائیوان ، ہانگ کانگ میں چین کیخلاف بغاوت کھڑی کرنے کی کوشش کر رہا ہے ، 33 سے زائد چینی کمپنیز کو امریکہ میں بلیک لسٹ کیا جا چکا ہے ۔۔۔ دوسری طرف بھارت تبت ، سنکیانگ میں علیحدگی پسندوں کو سپورٹ کر رہا ہے ، تبت کا علیحدگی پسند رہنما ( دلائ لامہ ) بھارت میں موجود ہے ۔ بھارت کو امریکہ کی دوستی بہت مہنگی پڑتی جا رہی ہے ۔

User Rating: Be the first one !

About Daily Pakistan

Check Also

امریکی کانگریس ایوان نمائندگان کی اسپیکر نینسی پلوسی نے امریکی صدر ٹرمپ کو پاگل قرار دے دیا

واشنگٹن: 9 جنوری ( ڈیلی پاکستان آن لائن) امریکی کانگریس ایوان نمائندگان کی اسپیکر نینسی …

Skip to toolbar